109

ملک وال، ایک ماہ قبل مبینہ اغوا ہونے والی 20سالہ لڑکی اسلام آباد سے بازیاب، لڑکی نے آشنا کے ساتھ بھاگ کر شادی کر لی تھی

ملک وال(نامہ نگار) ایک ماہ قبل مبینہ اغوا ہونے والی 20سالہ لڑکی اسلام آباد سے بازیاب، لڑکی نے آشنا کے ساتھ بھاگ کر شادی کر لی تھی جبکہ لڑکی کی والدہ نے مخالفین کیخؒاف مقدمہ درج کرا دیا تھا ، ڈی ایس پی رانا محمد اسلام کی پریس کانفرنس میں بریفنگ۔ تفصیلات کیمطابق ڈی ایس پی ملک وال رانا محمد اسلام نے اپنے دفتر میں سی آئی اے انچارج انسپکٹر عامر شاہین گوندل اور ایس ایچ او ملک وال محمد نعیم گجر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے صحافیوں کو بتایا کہ مونہ سیداں کی رہائشی خاتون غلام صغریٰ نے دو جنوری 2018کو تھانہ ملک وال میں اپنے مخالفین کیخلاف مقدمہ درج کرایا کہ پانچ ملزمان نے اس کی 20سالہ بیٹی کرن بتول کو رات کے وقت زبردستی اغوا کر لیا ہے خاتون کا مقدمہ کے ملزمان سے مقدمہ بازی چل رہی تھی تاہم ڈی پی او منڈی بہائوالدین نے ایک تفتیشی ٹیم تشکیل دی جس میں سی آئی اے سٹاف منڈی بہائوالدین انسپکٹر عامر شاہین گوندل اور ایس ایچ او تھانہ ملک وال سمیت دیگر اہلکار شامل تھے تفتیشی ٹیم نے موبائل فون ڈیٹا کے ذریعے مبینہ مغویہ کرن بتول کا سراغ لگا کر اسلام آباد سے بازیاب کرا لیا۔ ڈی ایس پی نے بتایا کہ کرن بتول اپنے آشنا ناظم حسین کے ساتھ بھاگ کر اس سے شادی کر لی تھی لیکن اس کی والدہ نے غلط بیانی کر کے مخالفین کیخلاف مقدمہ درج کرا دیا ، ڈی ایس پی رانا اسلام نے کہا کہ لڑکی کو برآمد کر کے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے۔۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں