30

نادرا آفس پھالیہ کا عوام کے ساتھ ناروا رویہ ،سفارشیوں کو کھلی چھٹی،خواتین کو کئی گھنٹے لائن میں لگارہنے کے باوجود باری نہیں آتی

منڈی بہاؤالدین(بیوروچیف)نادرا آفس پھالیہ کا عوام کے ساتھ ناروا رویہ ،سفارشیوں کو کھلی چھٹی،خواتین کو کئی گھنٹے لائن میں لگارہنے کے باوجود باری نہیں آتی ،خواتین کو ڈیل کرنیوالی اہلکار ایک گھنٹے میں ایک یا دو مسائلین کو نمٹا تی ہے ،جمعۃ المبار ک کو خواتین کا دن ہونے کے باوجود مرد سفارشیوں کو ترجیح دی جانے لگی ، مجبوراً سائلین دیگر ناردا سنٹروں کا رخ کرنے لگے، عوامی اور رفاہی تنظیموں کی طرف سے اصلاح احوال کا مطالبہ۔نادرا آفس پھالیہ کے افسران اور اہلکاروں کے تحصیل بھر سے آئے ہوئے سائلین سے معاندانہ رویہ اپنا رکھا ہے ،سنٹرسے باہر مرد وخواتین سائلین کی لمبی قطاریں لگی رہتی ہے جو شام گئے تک لگی رہتی ہیں ناردا آفس کے عملہ کی سست روی اور اندر سے سفارشیوں کی بھرمار کی وجہ سے اکثر سائلین کو بغیر کام کے واپس لوٹنا پڑتا ہے اور بعض دفعہ کئی کئی دن چکر لگوائے جاتے ہیں ،خصوصاً جمعہ المبارک کے دن جو کہ خواتین سائلین کے مخصوص ہوتا ہے تاہم اس دن بھی مردوں کا رش ہوتا ہے خصوصاً سفارشی حضرات اسسٹنٹ ڈپٹی مینجر صاحب کے گرد بیٹھے دیکھے جاسکتے ہیں ،خواتین کے کاؤنٹرکو ڈیل کرنے والی خوتون اہلکار کی سست روی کی وجہ سے پورے دن میں محض چند خواتین کو ہی نمٹا پاتی ہیں شکائت کرنے پر سخت رویہ کا سامنا کرنا پڑتا ہے نادرا آفس پھالیہ کے عملہ کے اس ناروا رویہ کی وجہ سے پھالیہ سمیت پوری تحصیل کے سائلین دیگر نادرا سنٹرز کا رخ کرنے پر مجبور ہوچکے ہیں پھالیہ کے عوامی اور سماجی حلقوں نے وفاقی وزیر داخلہ اور نادرا کے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ نادرا آفس پھالیہ کے عملہ کی اصلاح احوال کی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں