49

ڈی ایس پی سرکل پھالیہ کی سرکاری رہائشگاہ فنڈز کی عدم دستیابی اورعدم توجہی سے کھنڈرات میں تبدیل

ڈی ایس پی سرکل پھالیہ کی سرکاری رہائشگاہ فنڈز کی عدم دستیابی اورعدم توجہی سے کھنڈرات میں تبدیل ،رہائش نہ ہونے پر افسران پھالیہ میں پوسٹنگ پر کنی کترانے لگے ،فیملی سے دوری افسران کیلئے ذہنی کوفت کا باعث بننے لگی،موجودہ ڈی ایس پی بھی شہر سے 15کلو میٹر دور رہائش رکھنے پر مجبور ،اعلیٰ حکام سے فنڈز کی فراہمی اور رہائش کی تعمیر کا مطالبہ
پھالیہ(بیوروچیف) سب ڈویژنل پولیس آفیسر سرکل پھالیہ کی سرکاری رہائشگاہ فنڈز کی عدم دستیابی اور عدم توجہی کے باعث کھنڈرات میں تبدیل ہوکررہ گئی ہے ،ایس ڈی پی او پھالیہ سرکل سرکاری رہائش نہ ہونے پر دربدر کرایہ کی عمارت میں رہنے پر مجبور ہے ،پولیس کے منفی امیج کی وجہ سے شہری افسران کو پھالیہ شہر میں رہائش دینے سے کتراتے ہیں جس کی وجہ سے سابق ڈی ایس پی سرکل پھالیہ ارشد ساہی نے مقامی رائس ملز میں جبکہ موجودہ ڈی ایس پی سید محمود شاہ نے پھالیہ شہر سے تقریباً15کلو میٹر دور شوگرملز میں رہائش رکھی ہوئی ہے ۔عارضی رہائش کی وجہ سے پھالیہ سرکل میں تعینات ہونے والا کوئی بھی ڈی ایس پی اپنے بچوں کو پھالیہ شفٹ نہیں کرتا جس کی وجہ سے دھیان تقسیم ہونے کے باعث افسران اپنی ذمہ داریاں پوری تندہی سے ادانہیں کرپاتے اور اکثر فیملی سے دوری کی وجہ سے سرکل افسران ذہبی کوفت کا شکار نظر آتے ہیں ۔ڈی ایس پی سرکل پھالیہ سید محمود شاہ کے شہر سے باہر 15کلو میٹر دور رہائش رکھنے کی وجہ سے شہر میں کرائم کی شرح خوفناک حد تک بڑھ چکی ہے سرکل پھالیہ کے چاروں تھانوں پر ڈی ایس پی کی گرفت انتہائی کمزور نظر آتی ہے کیونکہ اکثر وارداتوں پر واضح احکامات کے باوجود تھانوں کے افسران عملدآمد کرنے سے غفلت اور سستی کا مظاہرہ کرتے ہیں جبکہ سرکل پھالیہ میں گشت کا موثر انتظام نہ ہونے کی بنا پر آئے روز چوریوں، ڈکیتیوں کی وارداتوں میں بھی اضافہ ہورہا ہے ،شہریوں کا کہنا ہے کہ اگر ڈی ایس پی سرکل پھالیہ اپنی رہائش اور فیملی پھالیہ شہر میں شفٹ کریں تووہ ذہنی سکون کے ساتھ زیادہ موثر انداز سے سرکل پھالیہ میں ہونے والے جرائم پر کنٹرول اور چیک اینڈ بیلینس کرسکتے ہیں،ڈی ایس پی سرکل پھالیہ سید محمودشاہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سرکاری رہائشگاہ بارے بات چیت چل رہی ہے میں ذاتی طور پر کچھ نہیں کرسکتا محکمہ کو افسران کی رہائشگاہ کی فراہمی ہرصورت یقینی بنانی چاہیئے اور سرکل پھالیہ میں ہونے والے جرائم پر میری پوری نظر ہے میرے سرکل کے افسران دن رات جرائم کی سرکوبی کیلئے اپنا موثر کردار ادا کررہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں