46

ریلوے ہسپتال ملکوال سے ڈاکٹر کے تبادلے کے بعد مریض بے یارو مددگار ، خواجہ سعد رفیق ڈاکٹر کی تعیناتی یقینی بنائیں، ریلوے ملازمین کا مطالبہ

ملک وال(نامہ نگار) ملکوال ریلوے جنکشن سرگودہا اور لالہ موسیٰ کے درمیان واقع ہے اور اسکے قریبی ریلوے اسٹیشنز منڈی بہاؤالدین،آلہ،ہریا،چک سیدا بنہ میاں والا، پھلروان ، منصورآباد،پنڈ مکو،ہرن پور،چالیسہ،پنڈدادنخان اور کھیوڑہ سے ملحقہ ریلوے ملازمین اور پینشنرز ریلوے ہسپتال ملکوال میں اپنے علاج معالجہ کے لئے آتے ہیں لیکن 2 ماہ قبل یہاں تعینات ڈاکٹر محمد عرفان کا تبادلہ ہونے کے بعد پاکستان ریلوے سے منسلک علاقہ بھر کے سینکڑوں ملازمین علاج معالجہ کے لئے سخت پریشان ہیں،جہلم سے ایک لیڈی ڈاکٹر کا ملکوال ریلوے ہسپتال تبادلہ ہو الیکن موصوفہ ایک دن بعد ہی تبادلہ کروا کر راولپنڈی سدھار گئی،ذرائع کے مطابق موجودہ صورت حال میں لالہ موسیٰ سے ڈاکٹر احمد شاہ کی ڈیوٹی لگائی گئی ہے کہ وہ ہر ہفتہ ،منگل اور جمعرات کو ریلوے ہسپتال ملکوال میں ٹائم دیں مگر ڈاکٹر احمد شاہ بھی ہفتہ میں ایک آدھ بار ہی ملکوال آتے ہیں اور لالہ موسیٰ سے صبح ساڑھے دس بجے سرگودہا جانے والی ٹرین 138ڈاؤن دھماکہ ا یکسپریس پر ملکوال 12.10 پر پہنچتے ہیں اور ساتھ ہی 353 اپ پسنجر ٹرین پر 1.15 پر واپس لالہ موسیٰ چلے جاتے ہیں ۔ڈاکٹر احمد شاہ سے جب بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ میں صرف ملکوال ریلوے ہسپتال کی دیکھ بھال کے لئے چکر لگاتا ہوں، ملکوال میں تو پھر بھی ڈسپنسر موجود ہے میرے پاس لالہ موسیٰ ریلوے ہسپتال میں ڈسپنسر بھی نہیں۔ملکوال کے ریلوے ملازمین کو چاہیئے کہ سرگودہا ریلوے ہسپتال کی طرح کسی مقامی پرائیویٹ ڈاکٹر کو ہائر کر لیں ۔ریلوے ملازمین نے خواجہ سعد رفیق اور ڈویژنل سپرنٹنڈنٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ ملکوال ریلوے ہسپتال میں ایم بی بی ایس ڈاکٹر کی تعیناتی مستقل بنیادوں پر کی جائے تاکہ ملازمین کو صحت کی سہولت مل سکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں