643

پھالیہ احاطہ کچہری میں فائرنگ کے نتیجہ میں مقدمہ قتل میں ملوث ملزم پولیس کی حراست میں قتل، پھالیہ پولیس نے 6افراد کے خلاف قتل، ایماء اور دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج

پھالیہ (تحصیل رپورٹر) پھالیہ احاطہ کچہری میں فائرنگ کے نتیجہ میں مقدمہ قتل میں ملوث ملزم پولیس کی حراست میں قتل، پھالیہ پولیس نے 6افراد کے خلاف قتل، ایماء اور دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج، تفصیلات کے مطابق پھالیہ کے موضع کالاشادیاں کے رہائشی اعجاز الٰہی ولد محمد نواز نے پھالیہ پولیس کو بتایا کہ وہ اپنے ساتھیوں کے ہمراہ بسلسلہ پیروی مقدمہ پھالیہ کچہری آیا ہوا تھا۔ ساڑھے 9بجے پولیس گارد ملزمان بابر زمان ولد محمد زمان، امجد اقبال ولد محمد نواز سکنائے کالاشادیاں، غلام محی الدین ولد غلام حسین سکنہ خوجیانوالی اور قمر آفتاب ولد محمد خاں سکنہ باہری کو پیش علاقہ مجسٹریٹ تھانہ قادرآباد کرکے سیڑھیوں کے ذریعے نیچے اتر رہے تھے کہ فخر عباس ولد سرفراز حسین شاہ، بلال حسن اور غلام عباس نے اندھاھند فائرنگ کرکے بابر زمان کو قتل کردیا۔ ملزمان نے فائرنگ کرکے احاطہ کچہری میں خوف وہراس پھیلایا۔ ملزمان فرار ہورہے تھے کہ 2ملزمان کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔ مقتول بابر زمان کی نعش کو پوسٹمارٹم کیلئے تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال پھالیہ منتقل کردیا گیا۔ مدعی کے مطابق قتل کی یہ واردات عظمت حسین ولد محمد باقر سکنہ کالاشادیاں، عظمت ولد محمد اعظم اور نوید اقبال ولد محمد اعظم کے ایماء پر ہوئی۔ وجہ عناد یہ ہے کہ 20اپریل 2017ء کو مقتول بابر زمان نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ فائرنگ کرکے چیئرمین یونین کونسل کالاشادیاں جمشید ا عظم تارڑ ولد محمد اعظم تارڑ سکنہ چک عبداللہ کو فائرنگ کرکے قتل کیا تھا۔ اس کا مقدمہ قادرآباد پولیس نے درج کیا تھا اسی مقدمہ میں گذشتہ روز مقتول بابر زمان اور اس کے ساتھی علاقہ مجسٹریٹ حلقہ قادرآباد میں پیشی کیلئے آئے ہوئے تھے۔ عوامی حلقے اس بات پر حیرت زدہ ہیں کہ سیکورٹی کے نام پر سینکڑوں افراد کو سمیت اسلحہ احاطہ کچہری میں متعین کیا گیا ہے ملزمان کس طرح مسلح احاطہ عدالت میں داخل ہوئے۔ اس واقعہ میں مقامی پولیس کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں